August 24, 2006

کامران کی بارہ دری






شاید اب یہ تصویروں کی آخری قسط ہے۔

یہ تصاویر غالبا میں نے چھ ماہ قبل لی تھیں۔ مگر بلاگر کی خرابی کی وجہ سے شائع نہ کر سکا۔

راوی ۔۔۔
زندگی میں پہلا دریا جو دیکھا وہ راوی تھا۔ مگر جو آخری دریا قریب سے دیکھا ہے وہ بھی راوی ہی ہے۔راوی سنا ہے کبھی بہتا تھا مگر آجکل لاہور سے پاس رینگتا ہے۔

دور سے دیکھ کر آپ شاید گمان کریں گے کہ یہ دریا ہے ، مگر در حقیقت یہ اب ایک گندے نالے کی صورت اختیار کرچکا ہے۔

میں نے گوگل ارتھ میں دیکھ تو وہاں ایک کالی سے نہر راوی میں جاتی نظر آتی ہے۔شاید وہ گندے پانی کا نالہ ہی ہے۔

خیر راوی کے کنارے،کم از کم جہاں سے میں کشتی میں سوار ہوا خوب گدلے تھے۔

کامران کی بارہ دری
کامران کی بارہ دری راوی کے وسط میں ہے۔اگر آپ لاہور کی سمت سے جائیں تو آپ کشتی میں جانا پڑے گا۔مگر دوسری طرف سے راوی خشک ملنے کی بھی توقع ہے۔

کامران کی بارہ دری لاہور ایک خوبصورت ترین جگہ ہے۔ یہاں کی باغ بانی بھی علی درجہ کی ہے۔ بارہ دری کے ساتھ ہی ایک فقیر/ملنگ صاحب بھی تشریف رکھتے ہیں۔ حن کے اردگرد عورتوں اور مردوں کا جکمٹھا لگا ہوا تھا۔۔

شام کے وقت لوگ راوی کے کنارے چراغ جلاتےہیں۔

جہانگیر کا مقبرہ






July 30, 2006

JAVA TFTP server

import java.io.*;
import java.net.*;
import java.util.Date;
//import sun.nio.cs.US_ASCII;
import java.util.StringTokenizer;
//import java.util.regex.ASCII;


public class Application1 {
public static final int PORT = 69;
public static final int DGRAM_BUF_LEN = 512;

public static void main(String[] args){

DatagramSocket socket = null;
try {
socket = new DatagramSocket(PORT);
} catch (SocketException e) {
e.printStackTrace();
System.exit(3);
}
while (true) {//to run server for infinite time
try {
byte[] buf = new byte[DGRAM_BUF_LEN];
DatagramPacket packet = new DatagramPacket(buf, buf.length);


socket.receive(packet);

//Byte[] data = socket.receive(packet);
String pckt = new String( packet.getData()) ;
//String tokenstr = "\0";
String strData[]= new String[2] ;

StringTokenizer tokenize = new StringTokenizer(pckt,"\0");
int i=0;
while (tokenize.hasMoreTokens()) {
strData[i]=(tokenize.nextToken());
i++;
}

int opcode = pckt.codePointAt(1);
System.out.println(pckt+" \n \t Packet recieved with OPCODE "+opcode);


String date = new Date().toString();
// buf = date.getBytes ();
DataInputStream in = new DataInputStream(new BufferedInputStream(new FileInputStream(new File("c:\\text.txt"))));
//data packet
buf[0]=0;
buf[1]=(byte)03;//opcode
buf[2]=0;
buf[3]=(byte)1;//block no
in.read(buf,4,500);//data so that it only transfer only 1 packet

/*2 bytes 2bytes n bytes
opcode block data*/

System.out.write(buf);
// get client info
InetAddress clientAddr = packet.getAddress();
int port = packet.getPort();
// prepare packet for return to client
packet = new DatagramPacket(buf, buf.length, clientAddr, port);
socket.send(packet);
} catch(IOException e) {
e.printStackTrace();
}
}
}

}

June 11, 2006

شعیب دبئی والے۔۔۔

شعیب بھائی میرے لیے ممکن نہیں تھا کہ میں آپ کے بلاگ پر جا کر یہ پیغام لکھوں۔
اس لیے یہاں لکھ رہا ہوں۔
کیا آپ مجھ سے
پر رابطہ کرسکتے ہیں؟؟؟










۔۔۔۔منزل پہ پہنچے گۓ کیسے۔۔۔؟
آپ کا جب تک ساتھ نہیں

بلاعنوان









--
ثاقب سعود